Urdu Article: Secularism is Not a Crime

To Know more how you can benefit from the Muslim Times, go to our Homepage or About Us page

Author: وجاہت مسعود

تاریخ دان احباب سے دریافت کیا ۔ سیاسیات کے اساتذہ سے استفسار کیا۔ پاکستان میں سیاسی ارتقا کے نشیب و فراز کے شناوروں سے پوچھا کہ آخر اردو زبان میں پہلی مرتبہ سیکولر ازم کا ترجمہ ”لادینیت“ کس عبقری نے کیا تھا۔ کسی نے مولوی عبدالحق کی اردو لغت پر نام دھرا۔ ارے صاحب، وہ لغت تو مولوی احتشام الحق حقی کی عرق ریزی کا نتیجہ تھی۔ مولوی عبدالحق تو اس لغت پر اپنا اسم گرامی شائع کرنے کے گناہ گار تھے۔ البتہ احتشام الحق حقی کے صاحبزادے شان الحق حقی نے آکسفورڈ یونیورسٹی کے لیے جو انگریزی اردو لغت مرتب کی اس میں بھی سیکولرازم کا ترجمہ ’لادینیت‘ ہی لکھا ہے۔ مقتدرہ قومی زبان کی انگریزی اردو لغت مرتبہ ڈاکٹر جمیل جالبی میں بھی سیکولرازم کے ذیل میں ” لادینی جذبہ یا رجحانات بالخصوص وہ نظام جس میں جملہ مذہبی عقاید و اعمال کی نفی ہوتی ہے“ کی عبارت دی گئی ہے۔

یہ سوال تشنہ جواب ہو سکتا ہے کہ سیکولر ازم کو پہلی مرتبہ کس نے ”لادینیت“ کا سراسر غلط اور گمراہ کن مفہوم بخشا تھا۔ تاہم یہ امر طے ہے کہ پاکستان میں سیکولرازم کو بد نیتی سے اور تکلیف دہ تسلسل کے ساتھ لادینیت کا نام دینے اور اسے عوام الناس کے ذہنوں میں راسخ کرنے میں بنیادی کردار جماعت اسلامی نے ادا کیا۔ جماعت اسلامی نے پراپیگنڈے کے لیے اپنے آلات کار کا انتخاب کمیو نسٹ تحریک کے ترکش اور جرمن نازی پارٹی کے اسلحہ خانے سے کیا تھا۔ نظریاتی پراپیگنڈے کے اس ترجیحی نمونے میں سچائی، فکری دیانت اور حقیقت بیانی کو زیادہ زحمت نہیں دی جاتی۔ مختلف اصطلاحات کا من مانا ترجمہ کیا جاتا ہے۔ اس ترجمے کو ایک خاص مفہوم پہنایا جاتا ہے اور پھر اس خود ساختہ تشریح کو اس شدت سے اور اس تواتر سے دہرایا جاتا ہے کہ عام ذہن نہ صرف اسے درست تسلیم کر لیتا ہے بلکہ اس سے مختلف رائے کو قریب قریب کفریہ کلمہ سمجھنے لگتا ہے۔

سیکولرازم کا کسی مذہب کی مخالفت یا حمایت سے کوئی تعلق نہیں۔ سیکولرازم ایسا ریاستی نظام ہے جو مذہب کی بنیاد پر کسی امتیاز کے بغیر تمام شہریوں کے تحفظ، بہبود اور ترقی کی ذمہ داری قبول کرتا ہے۔ سیکولر ریاست ان مقاصد کے حصول کے لیے فہم عامہ ، اجتماعی مشاورت اور انصاف کے اصول بروئے کار لاتی ہے۔

انسانی معاشرہ ارتقا پذیر مظہر ہے۔ تاریخی طور پر معاشرے کو منظم کرنے کے لیے مختلف ریاستی نظام اختیارکیے جاتے رہے ہیں۔ کبھی کسی خاص خاندان کو حقِ حکمرانی بخشا جاتا تھا، کبھی کسی مخصوص نسل یا زبان سے تعلق رکھنے والوں کو حقِ حکمرانی ودیعت کیا جاتا تھااور کہیں کسی خاص عقیدے کے پیشوا منصبِ حکمرانی کے اہل قرار دیے جاتے تھے۔ اسی طرح ریاست کا نصب العین بھی تبدیل ہوتا رہتا تھا۔ کہیں ریاست کا مقصد شخصی اقتدار کا فروغ قرار پاتا تو کہیں ریاست کسی خاص نسل یا قبیلے کی منفعت کے لیے کشور کشائی کا ذریعہ سمجھی جاتی تھی۔ کبھی ریاست کو کسی خاص عقیدے کی ترویج کے لیے آلہ کار بنایا جاتا تھا۔

ہزاروں برس کے تجربات کی روشنی میں بالآخرانسان اس نتیجے پر پہنچا کہ ریاستی بندوبست کی یہ تمام صورتیں معاشرے میں امن، انصاف اورترقی کی راہ میں رکاوٹ ڈالتی ہیں۔ انسانوں کے لیے امن ، تحفظ، انصاف اور بلند معیارِ زندگی کے حصول کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ مذہب کی بنیاد پر کسی امتیاز کے بغیر تمام شہریوں کو ریاست کا مساوی رکن تسلیم کیا جائے اور مختلف الوہی یا نظریاتی مقاصد کی بجائے ریاست کو انسانوں کی دنیاوی زندگی بہتر بنانے کا ذریعہ قرار دیا جائے۔ ریاست کو صرف ان معاملات میں دخل اندازی کی اجازت ہونا چاہیے جنھیں غیر جانب دارانہ اور معروضی سطح پر پرکھااور جانچاجا سکے۔ عقیدہ انفرادی انسانی ضمیر سے تعلق رکھتا ہے اور کسی فرد یا ادارے کے لیے کسی دوسرے انسان کے عقیدے کی پرکھ ممکن نہیں۔ چنانچہ مذہب میں مداخلت یا کسی مذہب کی بالادستی قائم کرنا یا کسی مذہب کو غلط قرار دینا ریاست کا کام نہیں۔

Read further

Dr. Zia H Shah, Chief Editor of the Muslim Times

Suggested Reading by Zia H Shah MD, Chief Editor of the Muslim Times, for the best understanding of personal religion in the 21st century

My main suggestion to the open minded readers is to read on and in the words of Sir Francis Bacon, “Read not to contradict … but to weigh and consider.”

Islamism — the Political Islam: The Challenge for the 21st Century

Are Religions Pluralistic or Myopic and Parochial?

The Holy Quran and the Seventh Century Arabian Metaphors

I am a Jew, a Catholic, a Christian and a Muslim; I am Zia H Shah

In Defense of the Secular Narrative of the Holy Quran

We Will be Judged by Our Compassion and Deeds and Not Our Dogma

Pope Francis: Satan Is Stalking The Catholic Church

A Message of Compassion and Love from the Holy Bible

Deciding to Leave: The Last Straw that Broke a Catholic’s Back!

Why it’s so hard to hold priests accountable for sex abuse

Abou Ben Adhem, A Compassionate Man

Americans are depressed and suicidal because something is wrong with our culture

Videos: Let Joel Osteen Breathe Hope, Optimism and Success in Your Life

What Can a Quarter of Unaffiliated US Population Find in Islam?

How Islam has Influenced Christian understanding of God

World Leading Christian Apologist, William Lane Craig Always Presents God of Islam and Judaism

24 Video lectures: The Great Courses: How Jesus Became God?

Video: The most famous Christian apologist, William Lane Craig, accepts there is no Trinity in the Old Testament

Book Review: The Dark Box: A Secret History of Confession

The Concept of Justice in Islam by Sir Zafrulla Khan

‘Islamic Law’: A Myopic Reading of the Quran

Proposing Daryl Davis as a Peace Maker for Palestinians and Israel, for he attends KKK rallies, despite being black

Kripkean Dogmatism: The Best Metaphor to Understand Religious and Political Debates

Categories: Secularism

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.